جمعہ‬‮   24   مئی‬‮   2024
 
 

بھارتی یوم جمہوریہ سے قبل مقبوضہ جموں وکشمیر میں سخت پابندیوں کی وجہ سے نظام زندگی مفلوج

       
مناظر: 352 | 24 Jan 2023  

سرینگر (نیوز ڈیسک ) غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں 26 جنوری کو بھارت کے یوم جمہوریہ سے قبل بھارتی فوجیوں کی طرف سے سیکورٹی کے سخت اقدامات کے باعث نظام زندگی مفلوج ہو کر رہ گیاہے اور تلاشیوں کا سلسلہ مسلسل جاری ہے ۔
کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی فوجیوں اور پیرا ملٹری اہلکاروں سرینگر اور دیگر علاقوں میں مختلف مقامات پر گاڑیوں اور مسافروں کی تلاشیاں لے رہے ہیں اور لوگوں کی آزادانہ نقل و حرکت پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔فوجیوں نے لوگوں کی نقل و حرکت پر کڑی نظر رکھنے کیلئے سونہ وار کرکٹ اسٹیڈیم سرینگر اور اس کے قریبی علاقوں میں س سی سی ٹی وی کیمرے نصب کر کے نگرانی مزید سخت کر دی ہے ۔ مقبوضہ علاقے میں کئی حصار پر مشتمل سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر گاڑیوں اور مسافروں کی تلاشیوں کاسلسلہ تیز کر دیا گیا ہے۔ پولیس اور سی آر پی ایف کے اہلکار رات کے اندھیرے میں بھی مشقیں کر رہے ہیں۔تمام سرکاری افسروں اور پبلک سیکٹر کے اداروں اور اسکولوں کو تقریب میں شرکت کے لیے کہا گیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانیت دشمنی کی تفصیل
From Jan 1989 till 29 Feb 2024
Total Killings 96,290
Custodial killings 7,327
Civilian arrested 169,429
Structures Arsoned/Destroyed 110,510
Women Widowed 22,973
Children Orphaned 1,07,955
Women gang-raped / Molested 11,263

Feb 2024
Total Killings 0
Custodial killings 0
Civilian arrested 317
Structures Arsoned/Destroyed 0
Women Widowed 0
Children Orphaned 0
Women gang-raped / Molested 0