جمعہ‬‮   24   مئی‬‮   2024
 
 

جموں :طلباء اور سرکاری ملازمین کو بھارتی یوم جمہوریہ تقریبات میں شرکت پر مجبور کیے جانے کا نکشاف

       
مناظر: 928 | 27 Jan 2023  

 

سرینگر (نیوز ڈیسک )غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں مودی حکومت نے بھارتی فوج اور پولیس اہلکاروں کے ذریعے سکولوں کے طلباء ، اساتذہ اور سرکاری ملازمین کو 26 جنوری کواپنے نام نہاد یوم جمہوریہ کی سرکاری تقریبات میں شرکت کیلئے مجبور کیا۔
کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام نے بھارتی یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طورپر منانے کیلئے مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی اور دنیا کو ایک واضح اوردوٹوک پیغام دیاکہ وہ اپنی سرزمین پر بھارت کے جبری اور غیر قانونی قبضے کو مسترد کرتے ہیں۔مقامی لوگوں نے صحافیوں کو بتایا کہ بھارتی فوجیوں اورخفیہ ایجنسیوں نے لوگوں کو خاص طور پر سکولوں کی انتظامیہ اور سرکاری ملازمین کو یوم جمہوریہ کی سرکاری تقریبات میں شرکت نہ کرنے کی صورت میں سنگین نتائج کی دھمکی دی تھی ۔عینی شاہدین نے بتایا کہ بھارتی فوج نے یوم جمہوریہ کی سرکاری تقریبات متعدد علاقوںمیں منعقد کیں اور کشمیریوںکو ان تقریبات میں شرکت پر مجبور کیا۔ بھارتی فوج کے زیر اہتمام تقاریب میں متعدد علاقوں کے نمبرداروںاوران کے آلہ کاروں نے شرکت کی ۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانیت دشمنی کی تفصیل
From Jan 1989 till 29 Feb 2024
Total Killings 96,290
Custodial killings 7,327
Civilian arrested 169,429
Structures Arsoned/Destroyed 110,510
Women Widowed 22,973
Children Orphaned 1,07,955
Women gang-raped / Molested 11,263

Feb 2024
Total Killings 0
Custodial killings 0
Civilian arrested 317
Structures Arsoned/Destroyed 0
Women Widowed 0
Children Orphaned 0
Women gang-raped / Molested 0