بدھ‬‮   19   جون‬‮   2024
 
 

مقبوضہ کشمیر : طویل خشک سالی کی وجہ سے پھلوں کے کاشت کاروں کی مشکلات میں اضافہ

       
مناظر: 517 | 19 Jan 2024  

 

سرینگر(نیوز ڈیسک ) بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں وکشمیر میں طویل خشک سالی کی وجہ سے پھلوں کے کاشت کاروںکی مشکلات میں اضافہ ہوگیاہے۔
جنوری میں بھی بارش یا برف باری کے بغیر مسلسل خشک موسم کی وجہ سے وادی کشمیر کے پھلوں کے کاشتکاروں کو سخت تشویش لاحق ہے۔ماہرین موسمیات نے خبردار کیا ہے کہ طویل خشک سالی کی وجہ سے آئندہ سیزن میں پھلوں بالخصوص سیب کا معیار اور پیداوار بری طرح متاثر ہوسکتی ہے۔ یونیورسٹی آف ایگریکلچرل سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی سرینگر کے فروٹ سائنسز کے ڈویژن کے سربراہ پروفیسر خالد مشتاق نے کہاہے کہ ابھی تک، ہم ایک محفوظ زون میں ہیں اور ہمیں بہتری کی امید ہے۔تاہم اگر فروری میں بارشیں یا برفباری نہیں ہوتی اور درجہ حرارت 20سے25 ڈگری سینٹی گریڈ تک بڑھ جاتا ہے، تو پھلوں کی فصل بری طرح متاثرہو گی ۔کشمیر یونیورسٹی کے شعبہ نباتیات کے ایک سائنس دان اختر ملک نے کہاہے کہ اگر فروری میں درجہ حرارت بڑھتا ہے، تو پھلوں کامعیار اورپیداوار متاثر ہوگی ۔انہوںنے کہاکہ مسلسل خشک سالی سے زیر زمین پانی کی سطح پر بھی گررہی ہے اورپھلوں کے درختوں کیلئے پانی کی فراہمی میں کمی ہو سکتی ہے ۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانیت دشمنی کی تفصیل
From Jan 1989 till 29 Feb 2024
Total Killings 96,290
Custodial killings 7,327
Civilian arrested 169,429
Structures Arsoned/Destroyed 110,510
Women Widowed 22,973
Children Orphaned 1,07,955
Women gang-raped / Molested 11,263

Feb 2024
Total Killings 0
Custodial killings 0
Civilian arrested 317
Structures Arsoned/Destroyed 0
Women Widowed 0
Children Orphaned 0
Women gang-raped / Molested 0