منگل‬‮   28   مئی‬‮   2024
 
 

طورخم میں پاک افغان فورسز میں کشیدگی کے باعث سرحد بند، لمبی قطاریں لگ گئیں 

       
مناظر: 359 | 20 Feb 2023  

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) طورخم بارڈر پر پاکستان اور افغانستان فورسز کے درمیان کشیدگی کے باعث سرحد کو ہر قسم کی آمد و رفت کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔
پاکستان اور افگانستان کے درمیان سب سے اہم اور مصروف ترین سرحدی گزرگاہ طورخم کو افغان حکام نے گزشتہ روز سے بند کررکھا ہے۔ سرحد بند ہونے کی وجہ سے دونوں ملکوں کے درمیان ناصرف تجارتی سرگرمیاں معطل ہیں بلکہ مسافروں کی پیدل آمدورفت بھی بند ہے۔
سرحدی گزرگاہ بند ہونے کی وجہ سے دونوں جانب سامان سے لدے ٹرکوں اور ٹرالروں کی لمبی لمبی قطاریں لگنا شروع ہو گئی ہیں۔
افغان حکام کا مطالبہ ہے کہ پاکستان آنے والے بیمار افراد کے ساتھ تیمار داروں کو بھی ویزے کے بغیر پاکستان جانے دیا جائے، جس کی وجہ سے گزشتہ روز سے سرحدی گزرگاہ پر کشیدگی ہے۔
پیر کی علی الصبح افغانستان کی سرحدی حدود سے فائرنگ ہوئی جس کے بعد پاکستان کی طرف سے بھی جواب دیا گیا تاہم دونوں اطراف سے کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔
واضح رہے کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان سرحدی گزرگاہیں گاہے بگاہے بند اور کھلتی رہی ہیں، طالبان کے دوبارہ برسراقتدار آنے سے پہلے بھی یہ گزرگاہیں دہشت گردی کے واقعات اور اہم تقریبات کی وجہ سے بند ہوتی رہی تھیں۔
طالبان کے افغانستان میں برسراقدار آنے کے بعد بھی طورخم اور چمن بارڈر پر کئی مرتبہ کشیدگی پیدا ہوچکی ہے لیکن پر مرتبہ باہمی گفت و شنید کے بعد معاملات کو سلجھا لیا جاتا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانیت دشمنی کی تفصیل
From Jan 1989 till 29 Feb 2024
Total Killings 96,290
Custodial killings 7,327
Civilian arrested 169,429
Structures Arsoned/Destroyed 110,510
Women Widowed 22,973
Children Orphaned 1,07,955
Women gang-raped / Molested 11,263

Feb 2024
Total Killings 0
Custodial killings 0
Civilian arrested 317
Structures Arsoned/Destroyed 0
Women Widowed 0
Children Orphaned 0
Women gang-raped / Molested 0