جمعرات‬‮   23   مئی‬‮   2024
 
 

مسلمانوں کو اقلیت بنانے کی گھنائونی سازش ،جموں وکشمیر کی اراضی بھارتی فوج کو لیز پر دینے کا انکشاف

       
مناظر: 600 | 15 Dec 2022  

سرینگر (نیوز ڈیسک ) غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ نے مقبوضہ علاقے میں کشمیریوں کی اراضی بھارتی فوج کو لیز پر دینے کے قابض انتظامیہ کے حالیہ اقدام کی شدید مذمت کی ہے ۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق عمر عبداللہ نے سرینگر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قابض انتظامیہ اس اراضی پر غیر کشمیری ہندوئوں کو آباد کرنا چاہتی ہے تاکہ مقبوضہ علاقے میں آبادی کا تناسب تبدیل کر کے جموں وکشمیر کی مسلم اکثریتی شناخت کو تبدیل کیا جاسکے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مودی کی فسطائی بھارتی حکومت اپنے شہریوں اور ریٹائرڈ فوجیوں کو مقبوضہ علاقے میں آباد کر کے جموں وکشمیر کی مسلم اکثریتی کو اقلیت میں تبدیل کرنے کے اپنے مذموم منصوبے پر عمل پیرا ہے ۔ عمر عبداللہ نے مزید کہاکہ اگر نیشنل کانفرنس مقبوضہ علاقے میں برسراقتدار آئی تو وہ جموں وکشمیر میں نافذ کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کو منسوخ کر دے گی جس کے تحت بھارتی فوجیوں کو نہتے کشمیریوں کے قتل عام اور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کی کھلی چھوٹ حاصل ہے ۔