پیر‬‮   22   جولائی   2024
 
 

بی جے پی حکومت نے گیان واپی مسجد میں پوجا کی اجازت دینے والے جج کومحتسب یونیورسٹی بنا دیا

       
مناظر: 228 | 2 Mar 2024  

 

لکھنو(نیوز ڈیسک )بھارتی ریاست اتر پردیش میں یوگی ناتھ آدتیہ کی سربراہی میںقائم بی جے پی کی ہندو توا حکومت نے گیان واپی مسجد کے تہہ خانے کو ہندوؤں کیلئے کھولنے اور انہیں وہاںپوجا کی اجازت دینے والے جج اجئے کرشن وشویش کو ایک سرکاری یونیورسٹی کا لوک پال( محتسب) مقررکیاہے۔

کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق جج وشویش نے اپنی مدت کار کے آخری دن رواں برس 31جنوری کوفیصلہ سناتے ہوئے گیان واپی مسجد کے تہہ خانے میں ہندوؤںکو پوجا کی اجازت دی تھی۔ یونیورسٹی کے اسسٹنٹ رجسٹرار برجیندر سنگھ نے تصدیق کی ہے کہ وشویش کا تین برس کیلئے لوک پا ل کے طور پر تقرر کیاگیا ہے۔ لوک پال کا کام طلباءکی بہتری کیلئے کام کرنا اور انکے درمیان تنازعات کو حل کرنا ہے۔غور طلب بات یہ ہے کہ وشویش اتر پردیش میںمندر مسجد معاملوں سے وابستہ پہلے جج نہیں ہیں جنہیں کوئی سرکاری عہدہ گیا گیا ہے ۔قبل ازیں یوگی ناتھ حکومت نے سی بی آئی کی خصوصی عدالت کے جج سریندر کمار یادو کو ریاست میں ڈپٹی لوک آیکت مقرر کیا تھا ۔ یادو نے بابری مسجد انہدام کیس میں30ستمبر 2020 کو بی جے پی کے سینئر رہنما لال کرشن ایڈوانی، مرلی منوہر جوشی ، اوما بھارتی، کلیان سنگھ اور دیگر کو بری کیا تھا۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانیت دشمنی کی تفصیل
From Jan 1989 till 29 Feb 2024
Total Killings 96,290
Custodial killings 7,327
Civilian arrested 169,429
Structures Arsoned/Destroyed 110,510
Women Widowed 22,973
Children Orphaned 1,07,955
Women gang-raped / Molested 11,263

Feb 2024
Total Killings 0
Custodial killings 0
Civilian arrested 317
Structures Arsoned/Destroyed 0
Women Widowed 0
Children Orphaned 0
Women gang-raped / Molested 0